ग़ज़लों का सफर : सुनिए खूबसूरत ग़ज़लें Dr. Ahmad Ali Barqi Azmi & Others: Courtsey Star News





ग़ज़लों का सफर : सुनिए खूबसूरत ग़ज़लें Dr. Ahmad Ali Barqi Azmi & Others: Courtsey Star News

موجِ سخن ادبی فورم کے زیرِ اہتمام محفلِ مشاعرہ نمبر-------72------ میزبا...

موجِ سخن ادبی فورم کے زیرِ اہتمام محفلِ مشاعرہ نمبر-------72------ میزبا...

DR AHMAD ALI BARQI AZMI SPEAKS & RECITES HIS URDU POETRY IN LIVE PROG. ...





DR AHMAD ALI BARQI  AZMI SPEAKS & RECITES HIS URDU POETRY IN LIVE PROG.OF TAHREEK E BAQAA E URDU

رحمت الٰہی برق اعظمی :بقلم حقانی القاسمی



رحمت الٰہی برق اعظمی
تحریر: حقانی القاسمی
رحمت الٰہی برق اعظمی
اعظم گڑھ کے ممتاز سخن وروں میں ان کا بھی شمار ہے ۔ انہوں نے مختلف اصناف سخن میں طبع آزمائی کی۔ان کی شاعری پڑھتے ہوئے ممتاز ناقد محمد حسن عسکری کی وہ بات ذہن میں گونجنے لگتی ہے جو انہوں نے فراق گورکھپوری کے تعلق سے کہی تھی۔ کہ فراق کی شاعری کی خوبی یہ ہے کہ بھر پور سانس کی شاعری ہے ان کی شاعری کی سانسیں چھوٹی اور بڑی نہیں ہیں اور عسکری صاحب نے بھی شاعری کے سانس کے اثرات کے بارے میں اشارہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ سانس کا نظام درست نہ ہوتو شاعری اچھی نہیں ہو سکتی۔
برق اعظمی کی شاعری کی بھی وہ خوبی ہے کہ اس میں سانس یا سارس کی پروبلم نہیں ہے ۔انھوں نے تضمینیں بھی لکھی ہیں اور تاریخی قطعات بھی لکھے ہیں اور دونوں مشکل معرکیں ہیں وہ یقینی طورپر ان یک لسانی شاعروں سے مختلف ہیں جو چند بحور و اوزان تک ہی موقوف و محدود ہیں مگر برق اعظمی کا دائرہ سخن صحرا کی طرح وسیع اور بسیط ہے ۔ ان کی تخلیقی شعلگی اور شعری آتش فشانی کا اندازہ مختلف اسالیب اور اصناف میں لکھی گئی شاعری سے ہوتا ہے۔ انھوں نے لکھنو اور دہلی دونوں دبستانوں سے استفادہ کیا ہے ۔ تنویر سخن ان کا مجموعہ کلام ہے جس میں انھوں نے عالم خواب و خیال میں عارف رومی اقبال اور غالب سے گفتگو کی ہے۔ حضرت عبدالرحمن جامی ، خواجہ عثمان ہارونی ، حضرت امیر خسرو، نصیر الدین چراغ دہلوی، اور فخر الدین عراقی،کی غزلوں پر جو تضمین انھوں نے لکھی ہیں وہ بہت کامیا ب ہیں اور اس بات کی دلیل ہیں کہ برق اعظمی کا مطالعہ مختلف ادبیات کو محیط ہے۔ خواجہ عثمان ہارونی کی غزل پر ان کی تضمین کچھ یوں ہے۔
مرا سینہ رہے کب تک امین راز ہمرازاں
سہی جاتی نہیں اب تو سخن چینئ غمازاں
خبر لے اب طبیب حالت نا ساز نا سازاں
بیا جاناں تماشا کن کہ در انبوہ جانبازاں
بصد سامان رسوائی سر بازار می رقصم
برق اعظمی ( 1911-1983) کے کلام میں جو سادگی ، شیرینی، سوز اور ساز ہے وہ انہیں زندہ رکھیں گے۔ شاعر مشک بار ہو ، مثل گل اور گلاب ہوتو اس کی خوشبو دور دور تک پھیلتی ہے۔

اردو دنیا کے جولائی ۲۰۲۰ کے شمارے میں برقی اعظمی کے شعری مجموعے محشر خیال پر سید حسین اختر کا تبصرہ بشکریہ اردو دنیا





موجِ سخن ادبی فورم کے زیرِ اہتمام محفلِ مشاعرہ نمبر-------56-------- میز...

موجِ سخن ادبی فورم کے زیرِ اہتمام محفلِ مشاعرہ نمبر-------56-------- میز...

Barqi Azmi Speaks About His Life and Works In Tahreek e Baqaa e Urdu









Barqi Azmi Speaks About His Life and Works In Tahreek e Baqaa e Urdu

Dr Ahmad Ali Barqi Azmi

ONLINE MUSHAIR -32 BAZM E NASEEM SHAIKH 18/5/2020





ONLINE  MUSHAIRA -32 BAZM E NASEEM SHAIKH  21/5/2020

Dr.Ahmad Ali Barqi Azmi Rrcites His Ghazal In Online Sukhanwar Chicago & Bazme Arbabe Sukhan Mushera Dated 14th June 2020





Ahmad Ali Barqi Azmi Rrcites His Ghazal In Online Sukhanwar Chicago & Bazme Arbabe Sukhan Mushera Dated 14th June 2020

موجِ سخن ادبی فورم کے زیرِ اہتمام محفلِ مشاعرہ نمبر----49---- میزبان نسیم شیخ...

موجِ سخن ادبی فورم کے زیرِ اہتمام محفلِ مشاعرہ نمبر----49---- میزبان نسیم شیخ...

مشاہیر شعرو ادب اردو : بشکریہ ظفر موہانی : Some Stalwarts Of Urdu Literature